Army is ABOVE honesty laws of Pakistan

Nobody should be above the law and accountability should be across the board without any political victimization Done by ISI and hidden Army hands in Media and Police.

[̲̅L][̲̅i̲̅][̲̅k̲̅][̲̅e̲̅] + [̲̅S][̲̅h̲̅][̲̅a̲̅][̲̅r̲̅][̲̅e̲̅]
این ایل سی میں اربوں کی کرپشن کا نیا سکینڈل
★★★★★★★★★★★★★★★★★★★★★★★★
نیشنل لاجسٹک سیل جسے حاضر سروس آرمی افسران چلاتے ہیں میں ایک ارب روپے کے نئے فراڈ اور سکینڈل کا انکشاف ہوا ہے جب کہ نیب پہلے ہی چار ارب روپے کے ایک اور سکینڈل میں تین فوجی جرنیلوں کے خلاف انکوائری کا آغاز کر چکا ہے۔ سرکاری دستاویزات سے انکشاف ہوتا ہے کہ این ایل سی نے ایک ایسی خفیہ ڈیل ایک پرائیویٹ پارٹی کے ساتھ کی تھی جس میں اب پتہ چلا ہے کہ اسے ایک ارب روپے کا کیش نقصان ہوا ہے اور خدشہ کا اظہار کیا جارہا ہے کہ یہ رقم ایک ارب سے بھی زیادہ ہو سکتی ہے۔

اس نقصان کو چھپانے کے لیے اب این ایل سی کی انتظامیہ جو کہ پہلے ہی تین جرنیلوں کے چار ارب روپے کے فراڈ کی وجہ سے اخبارات کی شہہ سرخیوں میں ہے اب اس فائل کو چھپا رہی ہے جس میں اس ڈیل کی ساری تفصیل موجود ہے کہ کیسے کس نے ایک ارب روپے کا ڈاکہ این ایل سی پر دن دہاڑے مارا تھا اور کس گروپ کو کیا فائدہ کیسے دیا گیا تھا۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ اس نئے سکینڈل کا انکشاف اس وقت ہوا جب آڈیٹر جنرل آف پاکستان نے این ایل سی کا آڈٹ شروع کیا تو اس محکمے نے ایک ایسی سرکاری فائل ان کے حوالے کرنے سے انکار کر دیا جس میں آڈیٹر کو شک تھا کہ ادارے کو ایک ارب روپے سے زائد کا نقصان ہوا تھا اور ایک پرائیویٹ پارٹی کو فائدہ پہنچایا گیا تھا۔

تاہم آڈٹ والوں نے بھی جان نہیں چھوڑی اور انہوں نے اس بورڈ میٹنگ کے منٹس ڈھونڈ نکالے جس میں اس پرائیویٹ پارٹی کو ایک ارب روپے کا فائدہ اور ادارے کو ایک ارب کا نقصان ہوا تھا۔ اس میٹنگ کے منٹس سے انکشاف ہوتا ہے کہ این ایل سی نے ایک پرائیویٹ گروپ کے ساتھ ایک جوائنٹ وینچر کے معاہدے پر دستخط کیے۔ اس سے پہلے پاکستان ریلوے نے این ایل سی سے دو ارب تیس کروڑ روپے لے کر ننانونے سال کے لیے اپنا ایک تیرہ ہزار سکوائر یارڈ زمین کا قطعہ لیز پر دیا تھا۔ این ایل سی نے اس پرائیویٹ گروپ کے ساتھ ایک معاہدہ کیا جس کے مطابق اس زمین پر 37 منزلوں پر مشتمل ایک عمارت اور تین بیسمنٹ بنانے تھے۔

تاہم حیرانی کی بات ہے کہ این ایل سی جس نے دو ارب تیس کروڑ روپے دے کر وہ زمین لیز پر لی تھی اس کا اس جوائنٹ ونچیر میں شیئر انچاس فیصد جب کہ اس پرائیویٹ گروپ کا اکثریتی شیئر اکاون فیصد رکھ دیا گیا۔ منصوبہ یہ تھا کہ ایک ارب بیس کروڑ روپے اس پراجیکٹ میں ڈالے جائیں گے اور ایک ارب ساتھ کروڑ روپے کا قرضہ لینا تھا جب کہ باقی پیسے دفاتر کو فروخت کر کے کمائے جانے تھے۔ یہ کیش بھی این ایل سی نے فراہم کیا تاکہ کام شروع ہو سکے۔ اب پتہ چلا ہے کہ پورا منصوبہ ناکام ہوگیا ہے اور اب وہ سارا گھاٹے کے بعد لیکیوڈیٹ ہونے والا ہوا تھا۔

این ایل سی اب اس منصوبے کے تمام سرکاری دستاویزات آڈٹ کے حوالے کرنے کو تیار نہیں ہیں کیونکہ اس کے افسران کو یہ خوف ہے کہ کہیں ان کا سارا سکینڈل کھل کر سامنے نہ آجائے کہ کس نے اس مال کمانے کی دوڑ میں کیا کمایا تھا اور وہ اربوں کا منصوبہ کسے ناکام ہوگیا تھا اور اس دو ارب تیس ارب روپے کا کیا ہوگا جس پریہ پلازہ بنایا جارہا تھا اور اس کے لیے ادائیگی پاکستان ریلوے کو کی گئی تھی اور اب اس میں اکاون فیصد شیئر تو اس پرائیویٹ گروپ کو دے دیے گئے تھے۔

دستاویزات کے مطابق اس پراجیکٹ میں بہت کھل کر پیسہ کھایا گیا ہے اور اسے چھپانے کے لیے ایک ہی راستہ تلاش کیا گیا ہے کہ اس سکینڈل کی فائل ہی آڈٹ کوفراہم نہ کی جائے۔ اب آڈٹ نے حکومت کو لکھ کر بھیجا ہے کہ جہاں اتنا بڑا منصوبہ ناکام ہوا سو ہوا وہاں اس دھندے میں این ایل سی کے اربوں روپے ڈوب گئے ہیں۔ سرکاری دستاویزات کے مطابق آڈٹ کا کہنا ہے کہ این ایل سی سے ایک ارب روپے تو کیش اس پرائیویٹ گروپ کو دینے کے لیے نکلوایا گیا تھا اور اس میں بورڈ کے ارکان کی ملی بھگت شامل تھی۔ یوں سب نے مل کر قوم کو ایک ارب روپے سے زیادہ لوٹ لیا تھا اور اب این ایل سی کے افسران اس سکینڈٖل کی فائل بھی دینے کو تیار نہیں تھے تاکہ کوئی ان کے خلاف کارروائی نہ کر سکے۔

Nobody should be above the law and accountability should be across the board without any political victimization

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s